ٹوبہ ٹیک سنگھ:عوام مسائل کے فوری حل کے لئے ڈپٹی کمشنراحمد خاور شہزاد اور ڈی پی او صادق علی ڈوگرکی ضلع کونسل میں کھلی کچہری

ٹوبہ ٹیک سنگھ: وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی خصوصی ہدایات پر عوام الناس کے مسائل کے فوری حل کے لئے ڈپٹی کمشنراحمد خاور شہزاد اور ڈی پی او صادق علی ڈوگر نے ضلع کونسل میں کھلی کچہری لگائی ۔ انہوں نے لگائی گئی کھلی کچہری میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری دفاتر میں عوامی شکایات کے ازالہ کیلئے اعلیٰ نظم و نسق کو برقرار رکھا جائے اس ضمن میں افسران اپنا قبلہ درست کر لیں اور عوامی مسائل خدمت خلق کے طور پر حل کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھیں۔عوام کیلئے مشکلات پیدا نہ کی جائیں بلکہ ترجیحی بنیادوں پر مسائل کے حل کیلئے تمام سرکاری اداروں کے افسران موثرحکمت عملی کے تحت فرائض سرانجام دیں۔اس موقع پرایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو رضوان محمود چوہان ، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل بابر سلمان ، اسسٹنٹ کمشنر ز، ڈی ایس پیز سمیت محکمہ صحت ، محکمہ تعلیم، سول ڈیفنس، واپڈا، سوئی گیس اور محکمہ مال کے سربرہان اورسائلین نے کثیرتعداد میں شرکت کی۔ ڈپٹی کمشنراحمد خاور شہزادنے سائلین کی طرف سے پیش کی گئی بارہ درخواستیں جن میں جائیداد کے تنازعہ، مالی امداد ، ناجائز تجاوزات ،گھریلو جھگڑے، علاج معالجہ، سوئی گیس، سابقہ گنے کی ادائیگی، پنشن کیس اور دیگر متفرق شکایات شامل تھیں کی فرداً فرداً سماعت کی اورازالہ کیلئے متعلقہ محکموں کے افسران کو دو دن کے اندرکارروائی مکمل کرنے کے احکامات جاری کئے۔ جبکہ چک نمبر 303کے نمبردار کے خلاف تین درخواستیں موصول ہوئیں جس پر انہوں نے فوری تحقیقات کا حکم دیا گیا۔ ڈپٹی کمشنراحمد خاور شہزاد نے کہا کہ حکومت پنجاب کی ہدایت پر اوپن ڈور پالیسی پر عمل درآمد جاری رہے گا ۔ ڈی سی احمد خاور شہزاد نے کہا کہ مسائل میں گھری ہوئی دکھی عوام کی خدمت ہماری اولین ترجیحات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کھلی کچہریوں کا سلسلہ تحصیل اور دور دراز علاقوں تک بڑھایا جائیگا تاکہ عام آدمی کو انکی دہلیز پر ریلیف حاصل ہو۔ ڈپٹی کمشنر نے محکمہ پولیس،صحت ، تعلیمی ،بلدیہ اور محکمہ مال سمیت تمام متعلقہ محکموں کے افسران کوہدایات جاری کیں کہ وہ عوام کی خدمت کو اپنا شعار بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب کا ویژن صرف عوام کی خدمت ہے۔ڈی پی او صادق علی ڈوگر نے کہا کہ پولیس اسٹیشن اورسرکاری دفاتروں میں آنے والے سائلین کو عزت و احترام دیا جائے اور میرٹ پر انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں